جعلی اکاؤنٹس کیس میں اہم پیشرفت

جعلی اکاؤنٹس کیس کی سماعت اسلام آباد کی احتساب عدالت میں ہوئی، شریک ملزم ندیم الطاف کو جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے پر احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کے روبرو پیش کیا گیا،،،سماعت کے دوران نیب حکام نے گرفتار ملزم ندیم الطاف کی رہائی کی استدعا کی،نیب پراسیکیوٹر نے کہا ملزم کی وعدہ معاف گواہ بننے کی درخواست پر تمام قانونی نقاط پرعمل کر لیا گیا ہے،،شریک ملزم ندیم الطاف نے اومنی گروپ کی جعلی کمپنیوں کو1ارب روپےقرض دیکر خورد برد کرنے کا اعتراف کرلیاہے جبکہ ندیم الطاف کا 164 کا بیان بھی ریکارڈ کرلیاگیا ہے اس کے علاوہ چیئرمین نیب ملزم کو وعدہ معاف گواہ بنانے کی درخواست منظورچکے ہیںنیب پراسیکیوٹر کا کہنا تھا کہ ندیم الطاف اب ہمارے گواہ بن چکے ہیں اور انہوں نےنیب کے ساتھ مکمل تعاون اور حقائق بتانے کا یقین دلایا ہے۔ اس لئے ان کی رہائی کی احکامات جاری کیے جائیں،،احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے نیب کی استدعا منظور کرتے ہوئے سندھ بینک کے سابق سربراہ ندیم الطاف کی رہائی کے احکامات جاری کردیئے ۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.