جج مبینہ ویڈیو اسکینڈل، میاں طارق 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل منتقل

جج ویڈیو سکینڈل کیس کے ملزم میاں طارق کو جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے پر جج شائستہ کنڈی کی عدالت میں پیش کیا گیا، ایف آئی اے نے ملزم کے مزید پانچ روز کے ریمانڈ کی استدعا کی جس پر فاضل جج نے ریمارکس دئیے کہ ایف آئی آر،،، کیا بلیک میلنگ کی ہے، عدالت نے ملزم سے ریکوری سے متعلق استفسار کیا تو تفتیشی افسر نے بتایا کہ دو موبائل اور ایک یوایس بی ریکارڈ کے مطابق ریکور ہوئی، میاں طارق کے گھر سے ٹیوٹا لینڈ کروزر ریکور ہوئے جس پر ملزم نے گاڑی سے لاتعلقی کا اظہار کیا۔ایف آئی اے نے عدالت کو بتایا کہ ملزم سے جو ریکوری ہونی تھی کرلی گئی۔ عدالت نے میاں طارق سے متعلق ریمارکس دئیے کہ انہیں جیل بھجوا دیں، جس پر ملزم نے کہا کہ اسے برین ٹیومر ہے، عدالت نے جج ویڈیو سکینڈل کیس میں ملزم میاں طارق کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا، 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ کے دوران عدالت نے ملزم کو طبی سہولیات فراہم کرنے کا حکم بھی دیا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.