جانوروں کے تحفظ کا عالمی دن

جانوروں کے تحفظ کا عالمی دن منانے کا فیصلہ 1931 میں فلورینس میں ماہرین ماحولیات کے کنونشن میں کیا گیا جس کا مقصد دنیا بھر میں نایاب اقسام کے جانوروں کو ناپید ہونے سے بچانا تھا ۔ بعدازاں ورلڈ اینیمل ڈے کا دائرہ کار وسیع ہوگیا اور دنیا کے اکثر ممالک میں بڑے پیمانے پر منایا جاتا ہے۔
جنگلی حیات انسان کی بقاء کیلئے ناگزیر ہے لیکن گلوبل وارمنگ اورغیرقانونی شکار سے جنگلی حیات کی کئی اقسام کو معدومی کا خطرہ پیداہوگیا ہے،پاکستان میں بہت سی آبی و جنگلی حیات معدومی کا شکار ہورہی ہیں جن میں پاکستان کا قومی جانور مارخور،بھورا ریچھ ، برفانی چیتا،ڈولفن،سبزکچھوا،ٹونا مچھلی،گدھ،ہمالین آئی بیکس،پینگوئین سمیت دیگر شامل ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.