ثالث کا پیچھا چھوڑو اور ہم سے بات کرو

افغان صدر اشرف غنی نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے افغان امن مذاکرات کو منسوخ کرنے کے اعلان کے بعد طالبان کو براہ راست حکومت سے مذاکرات کرنے کی پیشکش کی ،،،افغان صدر نے طالبان رہنماؤں پر زور دیا کہ وہ حکومت کے ساتھ براہ راست مذاکرات کریں اور اس بات چیت میں کسی ثالث کو شامل کرنے کی ضرورت نہیں ۔افغان صدر کا اپنےبیان میں کہنا ہے کہ جنگ کسی بھی مسئلے کا حل نہیں ہوتا اس لئے طالبان کو بھی چاہئے کہ وہ ملک میں خود کش حملوں اور پُرتشدد کارروائیوں کو روک کر مذاکرات کی میز پر آئیں اور ملک میں قیام امن کیلئے حکومت کے ساتھ مل کر چلیں۔دوسری جانب ترجمان طالبان کا کہنا ہے کہ امریکی صدر کی جانب سے آخری وقت پر امن مذاکرات منسوخ کرنا قابل افسوس عمل ہے اور اس کا زیادہ نقصان بھی امریکا کا ہی ہوگا ،،، انہوں نے کہا کہ اس بدلتی صورت حال پر مشاورتی عمل جاری ہے لیکن فی الحال کوئی حتمی فیصلہ نہیں کیا گیا

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.