تحریک انصاف کے رہنما کو ریلیف مل گیا

لاہورہائیکورٹ میں پی ٹی آئی رہنما عبدالعلیم خان کی آمدن سے زائد اثاثے اور آف شور کمپنی کیس میں درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی،جسٹس علی باقر نجفی کی سربراہی میں 2 رکنی بنچ نے بیرسٹر علی ظفر کی وساطت سےدائردرخواست ضمانت کی سماعت کی۔
عدالت نے استفسار کیا کہ نیب نے اب تک تفتیش میں کیا تلاش کیا ہے، اس پر نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ علیم خان نے بیرون ممالک میں غیر قانونی ٹرانزکشن کی ہیں جب کہ علیم خان نے وکیل نے اپنے دلائل میں کہا کہ ان کے مؤکل نے جو اثاثے بنائے اور رقوم منتقل کیں وہ ڈکلیئر ہیں، ان پر کرپشن اور ناجائز اثاثوں کا کوئی ٹیکس نہیں۔
عبدالعلیم خان نے دلائل دیتے ہوئےکہا کہ نیب نے میرے موکل کو6 فروری کو حراست میں لیا لیکن اب تک کوئی شواہد پیش نہیں کرسکا لہٰذا میرے موکل کی ضمانت منظور کی جائے۔ اس پرنیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ ملزم کے خلاف ریفرنس تیاری کے مراحل میں ہےجسے جلد دائر کردیا جائے گا۔
فاضل عدالت نے فریقین کے وکلا کے دلائل سننے کے بعد پی ٹی آئی رہنما عبدالعلیم خان کی درخواست ضمانت منظور کرلی اورملزم کو ایک ایک کروڑ روپے کے 2 ضمانتی مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا

شاید آپ یہ بھی پسند کریں
1 تبصرہ
  1. Amber shahzadi کہتے ہیں

    thanks for sharing..

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.