تبدیلی سرکارکےراج میں نقصان ہی نقصان

نئے پاکستان میں کاروبار کی ابتر صورتحال برقرار، سٹاک مارکیٹ کی سنی نہ جاسکی، گزشتہ ہفتے کے دوران شدید مندی کارجحان برقرار رہا، مارکیٹ 1213 پوائنٹس کمی کے بعد 32 ہزار 458 پوائنٹس کی سطح پر بند ہوئی جس کے باعث سرمایا کاروں کے 230 ارب روپے ڈوب گئے،حصص کی کم مالیت کا فارن انویسٹرز نے بھرپور فائدہ اٹھایا اور 64 لاکھ ڈالر مالیت کے شیئرز خریدے۔ سٹاک تجزیہ کاروں کے مطابق اسٹیٹ بینک کی جانب سے شرح سود میں اضافے اور عالمی عدالت میں رکوڈک کے فیصلے کے اثرات سٹاک مارکیٹ پر نظر آئے۔دوسری جانب ایک ہفتے کے دوران انٹربینک میں ڈالر 1 روپے 40 پیسے اضافے سے 160 روپے 19 پیسے میں بند جبکہ اوپن مارکیٹ میں امریکی کرنسی 95 پیسے اضافے سے 160 روپے 70 پیسے میں فروخت ہوئی۔ کرنسی ڈیلرز کے مطابق ڈالر کے طلب بڑھ جانے کے باعث اس کی قیمت میں اضافہ ہوا۔ نئے پاکستان میں سرمایہ کار کب تک رلتے رہیں گے؟ کیا پاکستان میں بہترین سرمایہ کاری کی فضا کبھی بحال ہوگی؟

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.