بھارت کی معاشی حالت بد سے بدتر ہوتی جارہی ہے

بھارتی سپریم کورٹ کے سابق جج جسٹس مرکنڈے کاٹجو نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے پیش گوئی کی ہے کہ ہندوستان میں مسلمانوں کو اسی طرح چن چن کر نشانہ بنایا جائے گا جیسے ماضی میں جرمنی میں یہودیوں کی نسل کشی کی گئی تھی
جسٹس مرکنڈے کاٹجو کا کہنا ہے کہ مودی سرکار کی غلط پالیسیوں کی بدولت ملک کی معاشی حالت بد سے بدتر ہوتی جارہی ہے جبکہ بی جے پی اپنی ناکامیوں اور خرابیوں سے پیدا ہونے والے معاشی بحران سے نمٹنے کیلئے مسلمانوں کیخلاف ایسے منفی حربے اختیار کرے گی۔
اس سے قبل جسٹس مرکنڈے کاٹجو کا اپنے ایک مضمون میں کہنا ہے کہ مغربی بنگال میں بی جے پی کے پراپیگنڈے کی وجہ سے بنگالی ہندو بھی فرقہ پرست سوچ کا شکار ہوگئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ مغربی بنگال ممتابنرجی کی مسلم خوشنودی پالیسی سے بھی ماحول بگڑ رہا ہے
سابق بھارتی جج نے شہریت کی تصدیق سے متعلق بی جے پی کے نئے شوشے کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ہندوستان میں رہنے والے 94 فیصد افراد ہندوستان کے اصل باشندے نہیں ہیں بلکہ یہ تمام مہاجر ہیں تو کیا مودی حکومت ان تمام افراد کو بھارت سے نکال دے گی؟

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.