برطانیہ :بریگزٹ ڈیل کیمرون کےبعد تھریسامےکی وزارت عظمیٰ کوبھی لےڈوبی

0

برطانیہ کی یورپی یونین سےعلیحدگی کی ڈیل میں ناکامی کا سامنا، ،وزیراعظم تھریسا مےنےمستعفی ہونےکااعلان کردیا۔ تھریسا مے نے 10 ڈاؤننگ اسٹریٹ پر خطاب کرتے ہوئے آئندہ ماہ 7 جون کو عہدہ چھوڑ دینے کا اعلان کیا ۔تھریسامے کا کہناتھاکہ بریگزٹ پرعملدرآمد نہ کرانےکاافسوس ہےاوریہ افسوس ہمیشہ رہےگا، انہوں نے کہا کہ ملک کی خدمت کرنامیرےلیےاعزازتھا تھریسا مے کو بریگزٹ ڈیل پر تنقید کا سامنا تھا جس کی وجہ سے انہوں نے وزارتِ عظمیٰ سے استعفیٰ دیاہے۔تھریسا مے 7 جون کو بطور کنزرویٹیو پارٹی لیڈر استعفیٰ دے دیں گی۔تھریسا مے بطور وزیر اعظم 3 جون سے شروع ہونے والے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے برطانیہ کے سرکاری دورے کی میزبانی کریں گی۔10جون سے کنزرویٹیو پارٹی کے نئے لیڈر کے انتخاب کے لیے باقاعدہ عمل شروع ہو گا۔جولائی میں نو منتخب پارٹی لیڈر وزیر اعظم برطانیہ کے عہدے کا حلف اٹھائیں گے۔واضح رہے کہ تھریسا مے مئی 2016ء سے برطانوی وزیر اعظم کے عہدے پر فائز تھیں۔تھریسامےسےقبل وزیراعظم ڈیوڈکیمرون کوبھی بریگزٹ ڈیل پراپنےعہدے سےہاتھ دھوناپڑاتھا،انہوں نےعوام ریفرنڈم میں ناکامی کوقبول کرتے ہوئےاستعفیٰ دیدیاتھا

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: