ایف بی آر کے ٹیکس نیٹ بڑھانے کیلئے اقدامات

گزشتہ روز چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی کی زیر صدارت ہونیوالی چیف کمشنرز کانفرنس میں ٹیکس آفسز اور لارج ٹیکس پیئر یونٹس کو انکم ٹیکس ریٹرنز جمع نہ کرانے والے بجلی و گیس کے صنعتی اور کمرشل صارفین،ایک ہزار سی سی سے بڑی گاڑیاں اور ایک کینال اور اس سے بڑے گھر رکھنے والے لوگوں کو نوٹس جاری کرنے کی منظوری دی گئی۔ جس میں ود ہولڈنگ ٹیکس وصولی کو بہتر بنانے کیلئے ایف بی آر کے ممبر اکاونٹنگ فہیم الحق کی سربراہی میں تین رکنی اعلی سطع کمیٹی بھی قائم کردی گئی ہے۔
رواں مالی سال کے دوران اب تک حاصل ہونے والی ٹیکس وصولیوں اور رواں ماہ کیلئے ٹیکس وصولیوں کے اہداف کے حصول اورٹیکس نیٹ سے باہر لوگوں کو ٹیکس نیٹ میں لانے کیلئے اٹھائے جانے والے اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔ ایف بی آر کی چیف کمشنرز کانفرنس میں فیصلہ کیا گیا کہ بجلی و گیس کے صنعتی اور کمرشل صارفین،ایک ہزار سی سی سے بڑی گاڑیوں، کنال اوراس سے بڑے گھر اور قیمتی فلیٹ رکھنے والوں کو نوٹس جاری کرنے کے ٹیکس گوشوارے جمع کرانے کی ہدایت کی جائے گی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.