اگراستعفیٰ ہی شرط ہےتومذاکرات نہیں ہونے چاہئیں:وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان سے حکومتی مذاکراتی کمیٹی کی ملاقات ہوئی جس میں رہبر کمیٹی سے ہونے والی ملاقاتوں پر وزیراعظم کو بریفنگ دی گئی
اس موقع پر وزیراعظم کا کہنا تھا کہ بار بار استعفےکی بات ہو رہی ہے، اگر استعفیٰ ہی شرط ہے تو مذاکرات نہیں ہونے چاہئیں۔’مولانا ٹائم پاس کر رہے ہیں تو ہم بھی ٹائم پاس کررہے ہیں’
وزیراعظم نے مزید کہا کہ استعفیٰ کا مطالبہ غیرآئینی،سنجیدہ مذاکرات کئے جائیں،، احتجاج جمہوری حق ہے،،حکومت کو کوئی خطرہ نہیں،،اگر حکومت کو خطرہ ہوتا تو دھرنے والوں کو اسلام آباد نہ آنے دیا جاتا،۔،، وزیراعظم نے مذاکراتی کمیٹی کو مذاکرات جاری رکھنے کی ہدایت بھی کردی
دوسری جانب چودھری پرویز الٰہی نے بھی وزیراعظم عمران خان سے ون آن ون ملاقات کی جس میں انہوں نے مولانا فضل الرحمان سے ہونے والی 5 ملاقاتوں کی تفصیلات وزیراعظم کو بتائیں۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پرویز الٰہی نے وزیراعظم عمران خان کو مذاکرات کے تعطل کی وجوہات سے بھی آگاہ کیا

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.