آزادی مارچ کو ناکام بنانے کیلئےحکومتی منصوبہ بندی

جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کے آزادی مارچ سے نمٹنے کے لیے حکومت نے منصوبہ بندی شروع کردی۔ وفاقی دارالحکومت میں امن و امان کی صورتحال کے پیش نظرسرکاری عمارتوں اور اہم تنصیبات پر فوج تعینات کرنے کی تجویز زیرغور ہے تاہم فوج کی طلبی کا حتمی فیصلہ وزارت داخلہ کرے گی۔
ادھروزارت داخلہ کی ہدایت پر وفاقی پولیس نے آزادی مارچ کو ناکام بنانے کیلئے حیران کن احکامات جاری کئے ہیں جس کے مطابق ضلع بھر میں ساؤنڈ سسٹم، کیٹرنگ، ٹینٹ سروس، جنریٹر،ہوٹلز اور گیسٹ ہاؤس سے منسلک کاروباری افراد کو دھرنے کےشرکا کو خدمات فراہم کرنے پر پابندی عائد کردی گئی اور خلاف ورزی پر کارروائی کی دھمکی دی گئی ہے ۔
دوسری جانب حکومت مذاکرات کے ذریعے مسئلے کے حل کی دعویدارہےاوراس سلسلےمیں گزشتہ روز آزادی مارچ سےمتعلق وزیر اعظم عمران خان کی ہدایت پروزیردفاع پرویزخٹک نے7رکنی حکومتی مذاکراتی کمیٹی تشکیل دے دی تھی، کمیٹی مولانا فضل الرحمان سمیت تمام اپوزیشن جماعتوں سے رابطے کرے گی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.