امریکا پاکستان کیساتھ بہتر تعلقات چاہتا ہے،زلمے خلیل زاد

واشنگٹن میں امریکی نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد برائے پاکستان و افغانستان نے یو ایس انسٹیٹیوٹ آف پیس سے خطاب کے دوران کہا کہ پاکستان نے امریکا اور طالبان کے درمیان مذاکرات میں سہولت کار کا کردار ادا کیا اور پاکستان کا ان مذاکرات کی کوششوں میں مثبت کردار قابل تعریف ہے تاہم امریکا پاکستان کے ساتھ بہترتعلقات چاہتا ہے اور ہم چاہتے ہیں پاکستان مزید کردار ادا کرے۔ زلمے خلیل کا مزید کہنا تھا کہ امریکا افغانستان سے نکلنے کا نہیں بلکہ امن کا معاہدہ کررہا ہے کیوں کہ طالبان سمجھتے ہیں کہ افغانستان میں امن فوج سے نہیں ہوسکتا۔ان کا کہنا تھا کہ طالبان سے مذاکرات بالکل ابتدائی مرحلے میں ہیں۔ ایک لمبے سفر کے آغاز کے ابھی دو تین قدم ہی اٹھائے گئے ہیں۔ زلمے خلیل زاد کا کہنا تھا کہ امریکا افغان حکومت اورطالبان میں مذاکرات چاہتا ہے لہٰذا افغان سرزمین کسی دوسرے کے خلاف استعمال نہیں ہونی چاہیے۔ امریکی نمائندہ خصوصی نے کہا کہ افغانستان میں جولائی کے انتخابات سے پہلے طالبان سے امن معاہدے کی کوشش کی جائے گی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.