امریکا افغان حکومت اور فورسز کی مدد جاری رکھے گا

امریکا کے نمائندہ خصوصی برائے افغان امن مذاکراتی عمل زلمے خلیل زاد نے ان رپورٹس کومسترد کردیا ہےجس میں طالبان کے حوالے سے کہا گیا تھا کہ معاہدے کے مطابق امریکا،افغان حکومت اور اس کی فورسز کی مدد نہیں کرے گا۔ سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک جاری پیغام میں زلمے خلیل زاد کا کہنا ہے کہ ایسی خبروں میں صداقت نہیں۔انہوں نے کہا کہ میں یہ واضح کردینا چاہتا ہوں کہ ہم اب افغان فورسز کا دفاع کررہے ہیں اور ہم طالبان سے معاہدے کے بعد اسے جاری رکھیں گے۔انہوں نے کہا کہ تمام گروہوں نے تسلیم کیا ہے کہ افغانستان کا مستقبل افغانستان میں اندرونی مذاکرات کے ذریعے طے کیا جائے گا۔
گزشتہ ہفتے افغانستان میں 18 برس سے جاری جنگ کے خاتمے اور قیامِ امن کے سلسلے میں افغان طالبان اور امریکا کے مابین ہونے والے مفاہمتی عمل میں غیر ملکی افواج کے انخلا کی مدت پر اتفاق کے حوالے سے رپورٹ سامنے آئی تھی۔ طالبان کے ترجمان سہیل شاہین کاکہنا تھا کہ انخلا کے وقت کے حوالے سے ہم سمجھوتے پر پہنچ چکے اور اب اس پر عملدرآمد کے طریقہ کار کے حوالے سے بات چیت کی جارہی ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.