افغانستان میں 18سال کی طویل اعصاب شکن جنگ

0

افغانستان میں جاری جنگ میں امریکا اوراتحادی ملکوں کی شکست کو دیکھ کر صدرٹرمپ بوکھلائے ہوئے ہیں اور وہ شرمندگی کو مٹانے کیلئے وقفے وقفے سے متنازعہ بیانات دیتے رہتےہیں،صدرٹرمپ نے زمینی حقائق کوجھٹلاتے ہوئے ایک بار پھر طاقت کےبل بوتےپرافغانستان کو فتح کرنے کی بڑھک ماری ہےوائٹ ہاؤس میں میڈیا سے گفتگو کے دوران صدر ٹرمپ نے کہا کہ افغان طالبان کے ساتھ بات چیت میں پیش رفت ہو رہی ہے تاہم امریکی فوج چاہےتو تین چار دن میں افغانستان کو فتح کرسکتی ہے مگرمیں ایک کروڑ افراد کو مارنا نہیں چاہتا۔انہوں نے واضح کیا کہ میں ایٹمی ہتھیار نہیں بلکہ روایتی ہتھیار استعمال کرنے کی بات کررہا ہوں۔ٹرمپ نے گزشتہ ماہ بھی ایسا ہی بیان دیا تھا جس پر افغان حکومت نے احتجاج کیا تھا۔افغان صدر اشرف غنی نے ٹرمپ سےاپنےبیان پروضاحت دینے کامطالبہ کیاتھا۔افغان طالبان نے بھی صدر ٹرمپ کے بیان کی مذمت کی تھی،طالبان ترجمان کا کہنا تھا کہ تاریخ گواہ ہے کہ افغانستان کو فتح کرنےکےخواب دیکھنے والوں کو ناکامی کا منہ دیکھنا پڑااوریہ غیرملکیوں کیلئے قبرستان ثابت ہوا۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: