اسرائیل نےانتخابات سے2 روز قبل نئی آبادکاریاں منظورکرلیں

نیتن یاہو کے دفتر سے جاری ہونے والے بیان کے مطابق اتوار کے روز وادی اردن میں ہونے والے کابینہ اجلاس نے اردن میں نو آبادکاریاں منظور کیں۔ بین الاقوامی قوانین کے تحت تمام آباد کاریاں غیر قانونی ہیں ۔حالیہ منظوری نیتن یاہو کی اردن کے علاقے کو اسرائیل میں شامل کرنے کے اعلان کے بعد سامنے آئی جو مغربی کنارے کا ایک تہائی حصہ ہے۔فلسطینی صدر محمود عباس کے ترجمان نبیل ابو ردینا نے کابینہ کے اجلاس کو غیر قانونی قرار دیا اور بین الاقوامی برادری سے اسرائیل کو تمام سیاسی مراحل کی بنیادیں تباہ کرنے سے روکنے کا کہا۔ ،،اسرائیلی نو آبادکاری کی مخالف این جی او، ‘پیس ناؤ’ کا کہنا تھا کہ ‘حکومت فلسطینیوں سے تنازع کے خاتمے کے 2 ریاستی معاہدے کو توڑ رہی ہے’۔ نیتن یاہو نے یہ بھی کہا ہے کہ وہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے تعاون سے مغربی کنارے کی آبادکاریوں کو علیحدہ کرنے کا بھی ارادہ رکھتےہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.