اب ٹرینیں جہاز سےبھی تیز چلیں گی

چین نے جہاز سے تیز چلنے والی ٹرین چلانے کا فیصلہ کیا ہےجس کی رفتار 500 میل فی گھنٹہ رکھی جائے گی۔چینی محکمہ ریلوے کی جانب سے مختلف شہروں میں ٹرین چلائی جائے گی، ٹرین کی رفتار 373 سے 497 میل فی گھنٹہ ہوگی جو 600 سے 800 کلو میٹرسفربنتاہے۔
تیز ترین ٹرین بنانے کی منظوری گزشتہ ہفتے چین کے سچوان صوبے میں ایک اعلیٰ سطح کے اجلاس کے دوران دی گئی۔تیز رفتار ٹرین بنانے کا مقصد ٹریفک کو اپ ڈیٹ کرنا ہے جس کے ذریعے دور دراز شہروں کا سفر منٹوں میں طے کیا جاسکے گا۔جہازسےتیزٹرینیں ویسٹرن شہروں چینگدو اور چانگنگ کے درمیان چلائی جائیں گی جن کی آبادی 5کروڑ کے لگ بھگ ہے۔انجینئرز کا کہنا ہے کہ ٹرین 2020 میں مکمل کرلی جائے گی اور اس کا پہلا تجربہ 2021 میں کیا جائے گا۔انتظامیہ کی جانب سے اس ٹرین کو ’اڑنے والی ٹرین‘ کا نام دیا گیا ہے جس کی لاگت ایک بلین پاؤنڈ بتائی گئی ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.