آغا سراج درانی کی درخواست ضمانت

سندھ ہائی کورٹ میں آغا سراج درانی،مسیح الدین، گلزار احمد اور دیگر کی درخواست ضمانت کی سماعت جسٹس اقبال کلہوڑو کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نےکی،جہاں عدالت نے آغا سراج کے خلاف نیب کے وارنٹ گرفتاری معطل کرنے کی استدعا مسترد کرتے ہوئے کہا کہ آغا سراج درانی کے وارنٹ پر عملدرآمدہوچکا، اب کیسے معطل کرسکتے ہیں؟۔
اس موقع پر نیب پراسیکیوٹر نےعدالت کو بتایا کہ آغا سراج درانی سمیت بیس ملزمان کے خلاف ریفرنس دائرکیا، آغاسراج درانی جیل میں ہیں اوران کی فیملی ملک سے فرار ہوچکی ہے اور نیب نے آغا سراج درانی کی 35 گاڑیوں اورکروڑوں کی جائیدادوں کا سراغ لگالیا ہے۔
نیب پراسیکیوٹر نےعدالت کو بتایا کہ آغا سراج درانی نے اختیارات کا ناجائز استعمال کیا،غیر قانونی بھرتیاں اورکرپشن کی،آمدن سے زائد اثاثے بنائے، تمام اہم شواہد نیب نے حاصل کرلیے ہیں۔جس پر جسٹس اقبال کلہوڑو نے ریمارکس دئیے کہ گرمیوں کی تعطیلات کی وجہ سے فوری سماعت ممکن نہیں،بعد ازاں عدالت نے درخواست ضمانت پر دلائل دینے کا حکم دیتے ہوئے سماعت سات اگست تک ملتوی کردی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.