آئی ایم ایف اور ایف بی آر کا ٹیکس وصولیوں پر ڈیڈ لاک

0

اسلام آباد میں بین الاقوامی مالیاتی فنڈ اور ایف بی آر حکام کے درمیان مذاکرات جاری ہیں تاہم ٹیکس وصولیوں کا ہدف کم کرنے اور ریگولیٹری اور کسٹمز ڈیوٹی کی شرح میں کمی پر اتفاق نہ ہونے سے آئی ایم ایف اور ایف بی آر کا ٹیکس وصولیوں پر ڈیڈ لاک بر قرار ہے۔
آئی ایم ایف ٹیکس وصولیوں کا نظر ثانی شدہ ہدف حاصل کرنے کیلئے مزید ٹیکس لگانے پر زور دے رہا ہے۔ آئی ایم ایف نےآئندہ مالی سال کے وفاقی بجٹ میں بھی 300 ارب روپے سے زائد کی ڈیوٹی و ٹیکس چھوٹ و رعایات ختم کرنےکا کہا گیا ہے ۔تاہم ایف بی آر کا کہنا ہے کہ پہلے ہی ہدف میں250 ارب کی کمی کر چکے ہیں،،، مہنگائی کی شرح میں اضافے اور ریونیو شارٹ فال کے امکان کے باعث ایف بی آر نے تاحال آئی ایم ایف کی شرط قبول نہیں کی ۔
آئی ایم ایف ٹیم کے ساتھ مذاکرات کا چوتھا دور کل ہوگا ۔ مذاکرات 13فروری تک جاری رہیں گے۔ جس میں معاملات کو حتمی شکل دی جائے گی اور آئی ایم ایف کے ساتھ دوسرے اقتصادی جائزہ مذاکرات کی کامیابی پرپاکستان کو 45 کروڑ ڈالر کی اگلی قسط ملنے کا امکان ہے۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: